تعلیمی ادارے کھولنے کا فیصلہ، اساتذہ کے کورونا ٹیسٹ کی شرط عائد

    September 7, 2020 4:37 pm PST
taleemizavia single page

اسلام آباد: وفاقی وزیر برائے تعلیم شفقت محمود کی زیر صدارت بین الصوبائی تعلیمی وزراء کی کانفرنس میں یہ فیصلہ کیا گیا کہ ملک بھر میں پندرہ ستبمر سے تعلیمی ادارے کھول دیے جائیں گے اس ضمن میں باقاعدہ ضابطہ بھی جاری کیا جائے گا۔

اجلاس میں یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ پندرہ ستمبر سے نویں، دسویں، گیارہویں اور بارہویں جماعتوں کی کلاسز کا اجراء ہوگا جبکہ بائیس ستمبر سے چھٹی، ساتویں اور آٹھویں کی کلاسز شروع ہوں گی۔

نرسری تا پانچویں کے بچوں کے لیے تعلیمی ادارے تیس ستمبر سے کھولے جائیں گے جبکہ تمام سکولوں میں پچاس فیصد طلباء کو ایک روز اور باقی ماندہ پچاس فیصد طلباء کو دوسرے روز کلاسز کے لیے بلایا جائے گا۔

ملک بھر میں کالجوں اور یونیورسٹیوں کو بھی پندرہ ستمبر سے کھول دیا جائے گا اس ضمن میں اداروں کو کورونا سے متعلق ضابطہ جاری کیا جائے گا۔ یونیورسٹیوں اور کالجوں کے اساتذہ کے کورونا ٹیسٹ کرانے کے لیے بھی الگ سے ضابطہ جاری کیا جائے گا۔

وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کا کہنا ہے کہ تعلیمی اداروں کو مرحلہ وار کھولنے سے کورونا پر قابو رکھنے میں مدد ملے گی۔ تعلیمی اداروں میں زیر تعلیم طلباء پر پاپندی ہوگی کہ وہ کلاس روم میں ماسک پہن کر بیٹھیں۔

بین الصوبائی وزراء کی کانفرنس اپنی تمام تر سفارشات نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سنٹر کو ارسال کرے گا، این سی او سی کی جانب سے حتمی منظوری کے بعد ہی تعلیمی ادارے کھولے جائیں گے۔

تعلیمی اداروں کو کھولنے لیے اختیارات این سی او سی کے سپُرد ہیں۔ واضح رہے کہ کورونا وائرس کے پھیلاو کے اندیشے کے باعث سولہ ستمبر سے تمام تعلیمی اداروں کو بند کر دیا گیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *