دو سال سے التواء کا شکار بابا گرونانک یونیورسٹی کا افتتاح کل ہوگا

    October 27, 2019 8:58 am PST
taleemizavia single page

اسلام آباد:حکومت نے پنجابی زبان و ادب کے فروغ کے لئے یورنیورسٹی قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ وزیراعظم عمران خان 28 اکتوبر کو ننکانہ صاحب میں بابا گرو ناننک یونیورسٹی کا سنگ بنیاد رکھیں گے۔

سرکاری طور پر دعوی کیا گیاہے کہ یہ یونیورسٹی اپنی نوعیت کی پہلی یونیورسٹی ہو گی جس میں پنجابی زبان اور خالصہ کے شعبوں پر مخصوص توجہ دی جائے گی.

مسلم لیگ ن کی حکومت نے پنجاب اسمبلی کے ستمبر 2017ء کے سیشن اجلاس میں پہلے ہی اس یونیورسٹی کی تعمیر کیلئے ایک ارب روپے فراہم کرنے کی منظوری دے چکی ہے۔ اس کے علاوہ انگلینڈ، امریکہ اور دیگر ممالک میں موجود سکھ لوگوں نے بھی اس یونیورسٹی کیلئے خطیر عطیات دینے کی پیشکش کی تھی۔

صوبہ پنجاب کی اسمبلی نے 2017ء میں متفقہ طور پر ننکانہ صاحب میں بابا گرونانک یونیورسٹی کے قیام کی حمایت کا اعلان کر دیا ہے۔

ننکانہ صاحب سکھ مذہب کے بانی گرو نانک کی جائے پیدائش ہونے کے حوالے سے دنیا بھر کے سکھوں کیلئے مرکزی حیثیت رکھتا ہے۔ یہ شہر لاہور کے مغرب میں 50 میل کے فاصلے پر واقع ہے ۔

اس سے قبل بابا گرونانک یونیورسٹی کے قیام کا مقام تبدیل کر کے مُریدکے کر دیا گیا تھا۔ دو سال قبل پنجاب اسمبلی کی منظوری کے بعد اب یہ ننکانہ صاحب میں ہی تعمیر کی جا رہی ہے.

یہ منصوبہ دو سال سے التواء کا شکار ہے جس کا افتتاح اب وزیر اعظم پاکستان عمران خان کل بروز سوموار کریں گے.

وفاقی وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے کہا کہ تمام جدید سہولیات سے بھر پور اس یونیورسٹی کو مذہبی ہم آہنگی، ثقافتی ترقی اور پیشہ وارانہ تربیت کے لحاظ سے بہترین مثال بنایا جائیگا۔

انہوں نے کہا کہ ننکانہ صاحب بابا گرونانک کی جائے پیدائش ہونے کی وجہ سے دنیا بھر کے سکھوں کے لئے بے حد عقیدت اور اہمیت کا حامل یے۔

اعجاز شاہ نے کہا کہ اسی بات کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے گرو نانک یونیورسٹی ننکانہ صاحب اور پورے پاکستان میں مذہبی سیاحت کے فروغ کے لئے بھی کام کرے گی۔گرو نانک یونیورسٹی قومی و بین الاقوامی سکھ برادری کے لئے کمیونٹی سینٹر کے طور پر بھی کام کریگی۔

وزیرداخلہ نے کہا کہ وزیر اعظم کا اس یو نیورسٹی کا سنگ بنیاد رکھنے کے لئے آنا نہ صرف ننکانہ صاحب کے باسیوں کے لئے بلکہ تمام قوم کے لئے باعث فخر ہے- وزیراعظم عمران خان کا پاکستان میں اقلیتوں کے تحفظ اور فروغ کے لئے کام قابل تعریف ہے۔

اعجاز شاہ نے کہا کہ مذہبی ہم آہنگی اور پر امن قوم ہونے کا یہ منہ بولتا ثبوت ہے۔ اس قدم کے ذریعے ننکانہ صاحب کو سیاحت کے حوالے سے بین الاقوامی معیار پر لایا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ گرو نانک یونیورسٹی کے علاوہ ننکانہ صاحب میں مزید ترقیاتی کاموں کا بھی آغاز ہو رہا ہے۔اس سب کے علاوہ بابا گرو نانک کے 550ویں یوم پیدائش کی تقریبات بھی اپنی مثال آپ ہونگی

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *