پرائیویٹ تعلیمی اداروں کی فیسیں 2017ء پر منجمد کرنے کا حکم جاری

    September 23, 2019 8:30 pm PST
taleemizavia single page

اسلام آباد: وفاقی وزارت تعلیم نے نجی تعلیمی اداروں کی فیسوں کو 2017ء کے فیس سٹرکچر کے مطابق منجمد کرنے کے احکامات جاری کر دیے ہیں. اس ضمن میں باقاعدہ طور پر مراسلہ بھی جاری کر دیا گیا ہے.

نرسری جماعت سے لے کر اے لیول تک کی تعلیم دینے والے نجی سکولز اور کالجوں پر اس مراسلے کا اطلاق ہوگا.

وزارت تعلیم نے نئے فیس سٹرکچر طے کرنے کا اختیار بھی پرائیویٹ ایجوکیشنل انسٹیٹویشنز ریگولیٹری اتھارٹی کو سُپرد کر دیا ہے. یہ اتھارٹی ہر کلاس کے لیے الگ الگ نیا فیس سٹرکچر وضع کرے گی.

وزارت تعلیم نے پرائیویٹ تعلیمی اداروں کو بقایا جات کی مد میں طلباء سے فیسیں وصول کرنے سے روک دیا ہے، اسی طرح 2017ء کے بعد اضافہ شدہ فیسوں کی وصولی سے بھی روک دیا گیا ہے.

وزارت نے یہ مراسلہ سپریم کورٹ آف پاکستان کے 13 ستبمر کے فیصلے کی روشنی میں جاری کیا ہے.

وزارت نے واضع طور پر احکامات جاری کیے ہیں کہ اتھارٹی کی جانب سے جب تک فیسوں‌ کا نیا سٹرکچر منظور نہیں کیا جاتا تب تک پرائیویٹ تعلیمی ادارے 2017ء والی فیسیں وصول کرنے کے پاپند ہوں گے.

مراسلے میں کہا گیا ہے کہ فیس ادائیگی کے معاملے پر کسی بھی طالب علم کو سکول سے نکالا گیا یا اس کے خلاف کارروائی عمل میں لائی گئی تو محکمہ تعلیم سخت کارروائی کرے گا.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *