پنجاب یونیورسٹی ملازمین کی ترقیوں کا نیا سروس سٹرکچر تشکیل

  • January 4, 2018 9:59 pm PST
taleemizavia single page

لاہور: آمنہ مسعود

پنجاب یونیورسٹی کے ملازمین کی اگلے گریڈز میں ترقیوں کے لیے نیا سروس سٹرکچر تیار کیا گیا ہے جس کی منظوری سنڈیکیٹ سے حاصل کی جائے گی۔ اس سروس سٹرکچر میں کوٹہ سسٹم کے تحت یونیورسٹی کے ملازمین کو اگلے گریڈز میں ترقی دی جائے گی۔

نئے سروس سٹرکچر میں ڈائریکٹ ریکروٹمنٹ، سینیارٹی کی بنیاد پر اور یونیورسٹی ملازمین کیلئے کوٹہ سسٹم کے تحت پرموشنز کی جائیں گی۔

یہ سروس سٹرکچر چیئرمین سروس سٹرکچر کمیٹی ڈاکٹر عبد اللہ دُرانی کی سربراہی میں سات رُکنی کمیٹی نے تشکیل دیا ہے ترقیوں کے اس نئے فارمولے کی حتمی منظوری کی سفارشات سنڈیکیٹ کو کر دی گئی ہیں۔

نئے سروس سٹرکچر کے مطابق ساتویں سکیل سے 17 ویں سکیل تک کے ملازمین کی ترقیوں کا نیا سروس سٹرکچر تیار کیا گیا ہے جس میں 18 ویں سکیل میں ترقی کیلئے 50 فیصد ڈائریکٹ ریکروٹمنٹ ہوگی۔ 18 ویں سکیل میں 25 فیصد یونیورسٹی ملازمین، 25 فیصد سینیارٹی کی بنیاد پر پرموشنز ہوں گی۔

اس سٹرکچر کے مطابق 16 ویں سکیل سے 17 ویں میں ترقی کیلئے 20 فیصد ڈائریکٹ ریکروٹمنٹ ہوگی۔ 17 ویں سکیل میں 30 فیصد یونیورسٹی ملازمین، 50 فیصد سینیارٹی کی بنیاد پر پرموشنز ہوں گی۔

پنجاب یونیورسٹی کے نئے سروس سٹرکچر ساتویں سکیل سے 14 ویں سکیل میں 10 فیصد ڈائریکٹر ریکروٹمنٹ ہو گی۔ مذکورہ سکیل میں 10 فیصد یونیورسٹی ملازمین، 80 فیصد سینیارٹی کی بنیاد پر پرموشنز ہوں گی۔

نئے سروس سٹرکچر کی تشکیل میں اقامتی آفیسر اول افتخار احمد چوہدری، اقامتی آفیسر دوم ملک محمد ظہیر، ایڈیشنل خزانچی راؤ محمد طارق رفیق، ڈائریکٹر آئی ٹی عمران قریشی، قائمقام چیف انجینئر عُمر لطیف اور ڈپٹی رجسٹرار امتیاز احمد نے سفارشات تیار کی ہیں۔

نیا سروس سٹرکچر یونیورسٹی کے تمام شعبہ جات میں تعینات آئی ٹی ملازمین پر ہوگا۔


Leave a Reply

Your email address will not be published.