بی اے کے متبادل ایسوسی ایٹ ڈگری میں سمیسٹر سسٹم لاگو کرنے کا فیصلہ

    October 20, 2020 6:30 pm PST
taleemizavia single page

لاہور: پنجاب کے تمام سرکاری اور نجی کالجوں میں بی اے کی ڈگری کے خاتمے کے بعد دو سالہ ایسوسی ایٹ ڈگری کا اجراء دو سال قبل کیا گیا تھا، حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ ایسوسی ایٹ ڈگری کے امتحانات سالانہ سسٹم کی بجائے سمیسٹر سسٹم کے تحت لیے جائیں گے۔

 پنجاب ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے بورڈ آف گورنرز کا اہم اجلاس ارفع کریم ٹاور لاہور میں منعقد کیا گیا۔ بورڈ نے سرکاری کالجوں میں کوالٹی اینہاسمنٹ سیل قائم کرنے اور ایسوسی ایٹ ڈگری میں سمیسٹر سسٹم لاگو کرنے کا اصولی فیصلہ کرلیاگیا۔

 تفصیلات کے مطابق  پی ایچ ای سی کے چیئرپرسن ڈاکٹر فضل احمد خالد کی زیر صدارت بورڈ کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں ڈاکٹرخالد آفتاب، ڈاکٹرعارف بٹ، ڈاکٹرخالد مسعود گوندل، ڈاکٹر نازش عطاء اللہ، ایم پی اے ساجد احمد، ایڈیشنل چیف سیکرٹری محکمہ ہائیر ایجوکیشن ارم بخاری نے شرکت کی۔

پی ایچ ای سی نے فیصلہ کیا ہے کوالٹی اینہاسمنٹ سیل کے ذریعے سے کالجوں میں ایسوسی ایٹ ڈگری اور بی ایس آنرز کی مانیٹرنگ ہوگی۔ کالجوں کے طلباء کیلئے کیرئیر کونسلنگ اور سکالر شپ پورٹل قائم کرنے کی منظوری بھی دی گئی ہے۔ پورٹل پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کی معاونت سے بنایا جائے گا۔

چیئرپرسن پی ایچ ای سی ڈاکٹر فضل احمد خالد نے تعلیمی زاویہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ کالجوں میں ایسوسی ایٹ ڈگری کے نصاب کی تیاری کیلئے ہر ڈسپلن کی الگ الگ کمیٹیاں تشکیل دینے کی منظوری حاصل کی گئی۔ ایسوسی ایٹ ڈگری کو سالانہ پروگرام سے سمیسٹر سسٹم میں تبدیل کرنے پر اصولی اتفاق کیاگیا۔

اجلاس میں پرائیویٹ یونیورسٹیوں کے سب کیمپس کو ڈگریاں ایوارڈ کرنے کا اختیار دینے کی پالیسی پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

پی ایچ ای سی نے فیصلہ کیا ہے کہ سرکاری یونیورسٹیوں میں گزشتہ ایک سال کے دوران بھرتی ہونے والے نئے اساتذہ کی ٹریننگ کرائی جائے گی جبکہ سرکاری یونیورسٹیوں میں تعینات ہونے والے نئے وائس چانسلرز  کے لئے لیڈر شپ ٹریننگ پروگرام شروع کرنے کی منظوری بھی دی گئی ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *