نجی تعلیمی اداروں کا چھٹیوں میں کمی کا نوٹیفکیشن واپس لینے کا مطالبہ

  • November 14, 2017 11:21 pm PST
taleemizavia single page

کوئٹہ

آل پاکستان پروگریسو پرائیویٹ سکولز ایسوسی ایشن نے بلوچستان حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ چھٹیوں میں کمی کا نوٹیفکیشن واپس لیا جائے، بلوچستان کے تمام پرائیویٹ سکولز اس فیصلے کو مسترد کرتے ہیں۔

آل بلوچستان پروگریسو پرائیویٹ اسکولز ایسوسی ایشن رجسٹرڈ کا اجلاس کوئٹہ میں منعقد ہوا ۔ اجلاس میں صوبائی صدر محمد نواز پندرانی ، صوبائی چیئرمین سید عطا محمد شاہ ، صوبائی جنرل سیکرٹری ایڈوکیٹ ، عمر فارق ، محمد عارف ، عبدالرحمٰن لونی ، محمد فہیم ، قاری محمد فیصل ، محمد عتیق بلوچ ، محمد وسیم یوسفزئی ، کنیز فاطمہ بلوچ ، شازیہ علی ، امان اللہ ترین ، حاجی عصمت اللہ بڑیچ ، طیب درانی ، میر وائس خلجی اور عظیم رئیسانی نے شرکت کی۔

ایسوسی ایشن کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ محکمہ تعلیم کو تجربہ گاہ نہ بنایا جائے تعطیلات میں کمی کا نوٹیفکیشن واپس لیا جائے بلوچستان کےتمام پرائیویٹ اسکولز نے اس فیصلےکو مسترد کیا ہے۔

ایگزیکٹو آرڈر کے نام پراچانک تعلیمی سیشن دسمبر کے آخر تک بڑھانے کی کوشش کی جا رہی ہیں پرائیویٹ اسکولز سال شروع ہونے سے پہلے ہی تعلیمی سال کے ایک ایک دن کی منصوبہ بندی کرتے ہیں اور پورا سال اس کے مطابق ہی چلتے ہیں ، تعلیمی سیشن میں تبدیلی سے طلبا بیماریوں کا شکار ہوجائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ تعلیم دشمن پالیسی کے خلاف عنقریب دھرنا دیا جائے گا جو اس وقت تک جاری رہے گا جب تک پنجم اور ہشتم کے امتحانات بورڈ سے لینے کا فیصلہ واپس نہ لیا جاتا ہے ، انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں تعلیمی میدان میں عرصہ دراز سے خدمات انجام دینے والے پرائیویٹ اسکولز کو گورنمنٹ بلوچستان نے شعبہ تعلیم سے متعلق قانون سازی اور پالیسی سازی یہاں تک عام فیصلوں میں مشوروں تک سے دور رکھا ہوا ہے ، انہوں نے مطالبہ کیا کہ نجی تعلیمی اداروں کے ساتھ ملک کر ان مسائل کے حل کیلئے عملی اقدامات اٹھائےجائیں ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.