دس سالہ پروفیسر حماد صافی، تعلیمی دُنیا میں تہلکہ برپا کر دیا

    views 1849 December 20, 2017 12:38 pm PST
taleemizavia single page

رپورٹ: تعلیمی زاویہ

پاکستان کے قبائلی علاقے مہمند ایجنسی سے تعلق رکھنے والا دس سالہ حماد صافی پانچویں جماعت کا طالبعلم ہے اور وہ پاکستان سمیت دُنیا بھر میں کم عمر ترین پروفیسر ہونے کا اعزاز رکھتا ہے۔ حماد صدیقی نجی و سرکاری یونیورسٹیز، کالجوں اور سکولز کے طلباء کو لیکچرز دیتا ہے اور وہ بلامعاوضہ کام کرتا ہے۔

حماد صافی بیک وقت بلاگر، موٹیویشنل سپیکر، گرافک ڈیزائنر اور وہ خود کو امن کا سفیر مانتا ہے۔ حماد یونیورسٹیز کے طلباء کو لیکچر کے دوران اُن کے سوالات کے تسلی بخش جوابات بھی دیتا ہے اور پانچویں جماعت کا یہ پشتون طالبعلم انگریزی زبان بولنے پر بھی عبور رکھتا ہے۔

Hammad 1

حماد نے اپنے متعدد انٹرویوز میں صرف اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ وہ سچا پاکستانی بننا چاہتا ہے، وہ کہتا ہے کہ مجھے انجینئر اور ڈاکٹر بننے کا شوق نہیں ہے، مجھے فخر ہوتا ہے جب میں یونیورسٹی کے طلباء سے کلاس روم میں مخاطب ہوتا ہوں۔

Hammad2

وہ اس وقت یونیورسٹی آف سپوکن انگلش اینڈ کمپیوٹر سائنس میں باقاعدہ طور پر تربیت حاصل کر رہے ہیں۔ حماد صافی کا نقط نظر ہے کہ اگر بھارت میں ایک اخبار فروش ملک کا صدر بن سکتا ہے تو پھر پاکستان میں ایسا کیوں نہیں ہوسکتا؟

Hammad3

حماد صافی پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کے ساتھ بنی گالا میں خصوصی ملاقات بھی کر چکے ہیں اور اُنہوں نے عمران خان کو اپنے ویژن اور مستقبل کی منصوبہ بندی سے بھی آگاہ کیا۔

Hammad4

حماد صافی کا عزم ہے کہ وہ فاٹا میں بہترین تعلیمی ادارے کی بنیاد رکھے گا اور اس ادارے میں بچوں کو مفت تعلیم فراہم کی جائے گی۔ وہ کہتا ہے کہ وہ دُنیا کا پہلا کم عمر ترین بچہ بنے گا جو اقوام متحدہ میں ممالک کے سربراہان سے خطاب کرے گا اور یہ خواب جلد پورا ہوگا۔

وہ آج کل افغان ٹی وی پر سُپر کڈز پروگرام بھی کر رہے ہیں جس میں وہ سماجی، تعلیمی مسائل پر گفتگو کرتا ہے۔

حماد کو پاکستان بھر کےسرکاری و نجی تعلیمی اداروں سے دعوت نامے موصول ہورہے ہیں اور وہ ان اداروں میں جا کر خصوصی طور پرلیکچرز دینے کا آغاز کر چکے ہیں۔