آکسفرڈ یونیورسٹی میں کورونا وائرس کی ویکسین پر اہم پیش رفت

    February 16, 2020 11:27 pm PST
taleemizavia single page

ویب ڈیسک: آکسفورڈ یونیورسٹی کے جینر انسٹی ٹیوٹ کی ایک ٹیم نے اعلان کیا ہے کہ اس نے اطالوی بائیو میڈیکل کمپنی ایڈونٹ سیرل کے ساتھ نوول کورونا وائرس سے بچاؤ کے لئے ویکسین کا پہلا بیچ تیار کرنے پر کام شروع کر دیا ہے۔

ایڈونٹ کمپنی مالیکیولر بائیوٹیکنالوجی ، بایومیڈیکل سائنسز اور نامیاتی کیمیا میں مہارت رکھتا ہے۔ اس سے قبل اس نے اطالوی اینٹی ایبولا ویکسین سمیت متعدد ویکسین تیار کی ہیں۔

یونیورسٹی کے نیوز آفس کے مطابق ، فی الحال نئی ویکسین کے لئے “سیڈ اسٹاک” ، ہیڈنگٹن میں یونیورسٹی کے کلینیکل بائیو مینوفیکچرنگ یونٹ میں تیار کیا جارہا ہے ، اور اسے مکمل ہونے پر ایڈونٹ منتقل کردیا جائے گا۔ معاہدے میں یہ واضح کیا گیا ہے کہ ایڈونٹ پہلے کلینیکل ٹرائلز کے لئے ایک ہزار خوراکیں تیار کرے گا۔

جینر انسٹی ٹیوٹ میں تحقیقی ٹیم کی سربراہی پروفیسر سارہ گلبرٹ کر رہی ہیں ، جن کی تحقیق امونولوجی پر مرکوز ہے۔ پروفیسر سارہ اس سے قبل میرس ، زیکا ، نپاہ وائرس اور لسا بخار سے متعلق منصوبوں میں بھی شامل رہی ہے۔

پروفیسر سارہ نے آکسفورڈ یونیورسٹی کے نیوز آفس کو بتایا کہ “ناول پیتھوجین کو ویکسین کی تیز رفتار نشوونما کی ضرورت ہوتی ہے۔ ٹیکنالوجی کا استعمال کرکے ہم کم وقت میں کورونا وائرس کی ویکسین تیار کرنے میں کامیاب ہوجائیں گے اور جلد ہی کلینیکل ٹرائل کیا جائے گا۔

پروفیسر سارہ کے مطابق ، کورونا وائرس کی ویکسین کی تیاری میں اسپائک پروٹین کے جینیاتی کوڈز کو شامل کیا گیا ہے تاکہ اینٹی بائیوڈیز کی تیاری کی جاسکے، یہ جینیاتی کوڈز وائرس سے جکڑے ہوئے انفیکشن کو روکنے میں مدد دے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *